0

پی ڈی ایم جلسے حکومت کے لئے خطرہ بن گئے

مرتضیٰ جاوید عباسی پھر بازی لے گئے

تحریر :- راجہ محمد ہارون

پاکستان کی بڑی سیاسی جماعت کے سربراہ سابق وزیراعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز صفدر کا اپنے سسرال مانسہرہ میں تاریخی جلسہ میں ہزارہ ڈویژن کے طول و عرض سے لیگیوں نے قافلوں کی شکل میں اپنی مرکزی قائد کا شاندار استقبال کرتے ہوئے جلسہ گاہ پہنچے اور اپنی مہمان نوازی کی روایات کو برقرار رکھتے ہوئے سرزمین ہزارہ میں داخل ہوتے ہی ضلع ہری پور کے مقامی رہنماؤں سابق ایم این اے بابر نواز خان سابق صوبائی وزیر قاضی اسد نے بھرپور انداز میں استقبال کیا اور حویلیاں انٹرچینج پر پہنچنے پر سینکڑوں گاڑیوں میں ہزاروں افراد نے سابق ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی مسلم لیگ ن کے صوبائی جنرل سیکرٹری ایم این اے مرتضیٰ جاوید عباسی مسلم لیگ یوتھ ونگ کے صوبائی صدر ایم پی اے سردار اورنگزیب نلوٹھہ مسلم لیگ کے ضلعی جنرل سیکرٹری ذوالفقار جاوید عباسی کی سربراہی میں مثالی استقبال کیا گیا اور گل پاشی اور نعرہ بازی کی گئی اور مرتضیٰ جاوید عباسی حویلیاں انٹرچینج سے مریم نواز کی گاڑی میں سوار ہو کر بڑے قافلے کی شکل میں مانسہرہ جلسہ گاہ پہنچے۔

جہاں پر پہلے سے سردار محمد یوسف، جنید قاسم، میاں ضیاء الرحمان کی قیادت میں اوگی تورغر بالاکوٹ بٹگرام کوہستان سمیت دیگر علاقوں سے ہزاروں کی تعداد میں عوام کا جم غفیر موجود تھا مریم نواز کی آمد سے دو روز قبل حویلیاں ایبٹ آباد میں مسلم لیگ ن کے سینئر رہنماء سردار مہتاب احمد خان کی سربراہی میں جلسہ کے متعلق میٹنگ منعقد ہوئی جس میں مریم نواز کے استقبال کیلئے لائحہ عمل طے کیا گیا بھرپور استقبال کریں گے اسی طرح ایبٹ آباد میں مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر مہابت اعوان جنرل سیکرٹری ذوالفقار جاوید عباسی نے بڑی میٹنگ بلوا کر عہدیداران و کارکنان کو قافلے کی شکل میں انٹرچینج پہنچنے کی ہدایات جاری کیں اور اسی طرح حویلیاں میں بھی ایم پی اے اورنگزیب نلوٹھہ اور تحصیل عہدیداران نے اجلاس طلب کیئے تھے مگر مریم نواز کی آمدپر مرتضیٰ جاوید عباسی اورنگزیب نلوٹھہ ذوالفقار جاوید عباسی سینکڑوں گاڑیوں کے قافلے میں ہزاروں افراد حویلیاں انٹرچینج پر پہنچے تھے مگر وہاں پر سردار مہتاب احمد خان کی مشاورتی میٹنگ کے شرکاء کسی بھی انٹرچینج پر عوامی نظروں سے اوجھل دکھائی دیئے جبکہ سردار مہتاب احمد خان، سردار فرید، ملک ارشد اعوان، ملک شفیق اعوان، ایوب آفریدی اور دیگر مریم نواز کے استقبال کی بجائے سردار مہتاب کے ہمراہ پہلے ہی جلسہ گاہ پہنچ گئے تھے جس سے ثابت ہوگیا ہے کہ ایبٹ آباد میں اکثریتی پارٹی کارکنان مرتضیٰ جاوید عباسی کے ہمراہ ہیں مانسہرہ میں مسلم لیگ ن کی قائد مریم نواز نے اپنے خطاب میں حکومت کو دھمکی دیتے ہوئے جلسہ کے شرکاء سے وعدہ لیا اگر اسلام آباد مارچ کی ضرورت پڑی تو مانسہرہ کے غیور عوام میرے ساتھ جانے کا وعدہ کریں جس پر شرکاء جلسہ نے ہاتھ کھڑے کرتے ہوئے وعدہ کیا مانسہرہ جلسہ میں مریم نواز کا اسلام آباد میں جانے کا عندیہ موجودہ حکومت کیلئے کسی خطرہ سے کم نہیں ہے اور گزشتہ روز پشاور پی ڈی ایم جلسہ میں ہزارہ بھر سے مسلم لیگ ن اور اتحادی پارٹیوں کے کارکنان قافلوں کی شکل میں پشاور پہنچے جبکہ ایبٹ آباد، حویلیاں، مانسہرہ، ہری پور سے ایک بڑا قافلہ مرتضیٰ جاوید اور مخصوص افراد پر مشتمل قافلہ سردار اورنگزیب نلوٹھہ کی قیادت میں پشاور پہنچا یہاں پر بھی سردار مہتاب احمد کے نامزد کردہ عہدیداران اور کارکنان عوام کی نظروں سے مسلسل اوجھل رہے ہیں جبکہ پشاور جلسہ کیلئے ضلعی جنرل سیکرٹری مسلم لیگ ن ذوالفقار جاوید عباسی نے موثر انتظامات کرتے ہوئے سینکڑوں کارکنان کو ساتھ لے جانے میں کامیاب ہوئے ہیں جبکہ حکومت انتظامی مشینری کے ذریعے صرف عام عوام تاجروں سکولوں و دیگر کے خلاف SOPs پر عمل درآمد نہ کرنے والوں کے خلاف کاروائی تک محدود ہو کر دوہرے معیار کو فروغ دے رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں